یونان میں جھوٹی خبریں پھیلا کرپاکستانی تارکین وطن کو گمراہ کرنے کی کوشش

یونان میں پاکستانی کمیونٹی کو مطلع کیا جاتا ہے کہ حکومت پاکستان نے انسانی سمگلنگ کے جرم میں جاوید آرائیں کی گرفتاری کے ریڈ وارنٹ جاری کیے ہیں (کنٹرول نمبر 2219/10-2006)۔ بجائے پاکستان جا کر قانون کے سامنے اپنے آپ کو پیش کرنے کے، وہ فیک نیوز (جھوٹی خبریں) پھیلا کر تارکین وطن کو گمراہ کرنے اور ان میں بےچینی پھیلانے کی ناکام کوشش کر رہے ہیں۔ مندرجہ ذیل ویڈیو میں اشتہاری مجرم کا وزیر اعظم پاکستان اور پاکستان کے اداروں کے بارے میں غلط زبان کا استعمال کرنا انتہائی افسوس ناک اور قابل مذمت ہے۔ وڈیو میں موجود جاوید آرائیں کے انسانی سمگلنگ نیٹ ورک کے کارکن، ندیم احمد ولد نذیر احمد کو وزارت داخلہ نے غیر قانونی طور پر یونان جانے کے جرم میں 2016 میں بلیک لسٹ کیا تھا (کیس نمبر 5005100262002) جس کی رو سے ان کا پاسپورٹ سفارت خانہ نہیں بنا سکتا اور ان کا کیس وزارت داخلہ کے پاس ہے۔ ندیم احمد کو سفارت خانہ کے متعلقہ افسر نے وزارت داخلہ سے رجوع کرنے کے بارے میں آگاہ کیا تھا۔ لیکن بدقسمتی سے ملک دشمن ایجنڈے کے تحت سرکاری اداروں کے خلاف بدزبانی اور بےبنیاد پروپیگنڈہ اس جرائم پیشہ گینگ کی مجرمانہ ذہنیت کی عکاسی کرتا ہے۔ ان جیسے مجرموں کی وجہ سے یونان میں پاکستانی کمیونٹی کی ساکھ کو نقصان پہنچتا ہے اور کاغذات کی اٹیسٹیشن اور فیملی ویزا کا بلاک ہونے جیسے مسائل کا سامنا کرنا پڑتا ہے۔

سفارت خانہ پاکستان یونان اپنی فلاحی خدمات، قونصلر کام میں جدت اور پاکستانی کمیونٹی کے تمام مسائل کو حل کرنے کی کوششوں کی وجہ سے پاکستانی کمیونٹی سے جڑا ہوا ہے۔ سفارت خانہ پاکستان یونان وہ واحد پاکستانی سفارت خانہ ہے جو انتہائی شفاف طریقے سے ہر ہفتہ پریس ریلیز کے ذریعے ہمیں موصول ہونے والے پاسپورٹ کی لسٹ شائع کرتا ہے (ہماری اس طرح کی سینکڑوں پوسٹس ریکارڈ پر ہیں)۔ سفارت خانہ پاکستان یونان نے اب تک کمیونٹی کے پچاس ہزار سے زائد افراد کے مشین ریڈیبل پاسپورٹ بنائے ہیں۔ اگر کسی فرد کے پاسپورٹ بننے میں تاخیر ہے اس کی ہمیشہ کوئی قانونی وجہ ہوتی ہے۔ اس طرح کے مجرم اپنی سیاست کی خاطرغلط خبر لگا کر خواہ مخواہ تنازعہ کھڑا کرنے کی کوشش کرتے ہیں تاکہ پاکستانی کمیونٹی ترقی نہ کر سکے۔ حکومت پاکستان جاوید آرائیں سمیت کمیونٹی کو لوٹنے والے تمام ایجنٹوں اور مجرموں کو ہمیشہ کے لیے بیروزگار کر رہی ہے۔ جھوٹے پروپیگنڈے، شور مچانے، دھمکی یا دباو کی وجہ سے کسی بھی قسم کا ایجنٹی سسٹم برداشت نہیں کیا جا سکتا۔

وزیراعظم پاکستان اور سرکاری اداروں کے بارے میں جھوٹا پروپیگنڈا کرنے اور دھمکیاں دینے کے جرم پر حکومت پاکستان مجرم کے خلاف یونان اور پاکستان میں قانونی کاروائی کرے گی۔ پاکستانی کمیونٹی کے سب محب وطن اور باشعور افراد سے گزارش ہے کہ مجرم جاوید آرائیں کے نفرت انگیز تقاریر پر مبنی مندرجہ ذیل فیس بک لنک پر جا کر انکے پیج کو رپورٹ کر کے اس کو بلاک کروائیں۔ شکریہ۔

آپ یہ بھی پسند کریں گے