سمندری طوفان کیارا نے شمالی یورپ میں تباہی مچادی،سات افرادہلاک

سمندری طوفان کیارا نے شمالی یورپ میں تباہی مچادی، طوفانی ہوائوں اور بارشوں کے باعث مختلف حادثات میں سات افراد ہلاک ہو گئے۔میڈیارپورٹس کے مطابق طوفان نے برطانیہ،پولینڈ، سلوینیا،سوئیڈن ،فرانس،جرمنی ،بیلجیم اورسوئٹزرلینڈ کو بھی اپنی گرفت میں لے رکھا ہے،تیز ہوائوں اور برف کے باعث اکثر مقامات پر نظام زندگی معطل ہوگیا ہے۔

برطانیہ کے شمالی علاقوں میں 90 میل فی گھنٹہ کی رفتار سے چلنے والی ہواو?ں نے متعددرخت جڑوں سے اٴْکھاڑ دیے جس کے باعث ٹریفک کی آمدورفت بند ہوگئی۔کار لائل کے نزدیک سیلاب کے باعث انگلینڈ جانے والی ٹرینوں میں بھی رکاوٹ پیدا ہوگئی ہے۔تیز ہوا کے باعث کئی مقامات پر بڑی گاڑیوں کے لیے پل بند کردیے گئے ہیں اور فیری سروس معطل ہوگئی ہے۔

ایم75پر لارک ہال کے نزدیک کئی گاڑیاں آپس میں ٹکرا گئی اور کچھ دیر کے لیے موٹر وے کو بند کردیا گیا جبکہ 200 سے زیادہ پروازیں منسوخ اور سیکڑوں ملتوی کردی گئیں۔

یاد رہے کہ گزشتہ روز بحراوقیانوس میں اٹھنے والا سمندری طوفان کیارا برطانوی ساحل سے ٹکرا گیا تھاجس کے باعث متعدد پروازیں منسوخ اور ٹرانسپورٹ کا نظام شدید متاثر ہوا ۔طوفان کی وجہ مختلف علاقوں میں تیز ہواوں کے ساتھ بارش کا سلسلہ جاری ہے جبکہ مختلف حادثات میں7افرادہلاک ہوگئے ۔محکمہ موسمیات نے پیلو وارننگ جاری کرتے ہوئے خبردار کیا کہ آئندہ دو دنوں میں60میل فی گھنٹہ کی رفتار سے ہوائیں چلنے اور8انچ برف گرنے کا امکان ہے، لہٰذا عوام سفر کے سلسلہ میں احتیاط کریں۔

برطانیہ کا شمال مغربی علاقہ طوفان سے شدید متاثر ہوا ہے، سیلفورڈ، بولٹن، راچڈیل، اولڈہم کے کئی علاقوں میں سڑکیں سیلاب کے باعث بند کردی گئیں جب کہ ایم سکسٹی مڈلٹن جنکشن سیلاب کے باعث ٹریفک کے لیے بند کردیا گیا ہے۔

آپ یہ بھی پسند کریں گے