اوورسیززپاکستانی گلوبل فاءونڈیشن اب انٹرنیشنل اوورسیززادارہ بن چکا ہے، طاہرہ دین

نیویارک(نمائندہ خصوصی) اووسیززپاکستانی گلوبل فاءونڈیشن کی خواتین ونگ کی مرکزی صدر طاہرہ دین نے دورہ ِپاکستان کیا ۔ فاءونڈیشن کے خواتین ونگ صدر نے گذشتہ دنوں پاکستان میں مختلف شعبوں سے تعلق رکھنے والے اہم شخصیات سے ملاقات کی اور اوورسیززپاکستانی گلوبل فاءونڈیشن کی رہنمائی بھی کی ۔

طاہرہ دین اور ان کے شوہر کے ہمراہ دورہ ِپاکستان کے مختلف شہر میں ہوا جہاں پر اوورسیززپاکستانی گلوبل فاءونڈیشن کے بانی رکن و شریک چیئرمین اور پاکستانی صحافت کے روح ِرواں افضل بٹ نے طاہرہ دین کا والہانہ استقبال کیا ۔ اس موقع پر طاہرہ دین نے اوورسیززپاکستانی گلوبل فاءونڈیشن کی نمائندگی کرتے ہوئے کہا کہ اوورسیززپاکستانی گلوبل فاءونڈیشن ملک سے باہر رہنے والے پاکستانی لوگوں کے لیے منفرد فورم ہیں اور یہ ایک دلچسپ بات ہے کہ نہ صرف امریکہ بلکہ پوری دنیا میں کسی اوورسیززپاکستانی آرگنائزیشن کا انفرادی طور خواتین ونگ بنایا ہو، انہوں نے مزید کہا مجھے اس بات کا اعزاز حاصل ہے کہ میں دنیا میں کسی پاکستانی اوورسیززآرگنائزیشن کے خواتین ونگ پہلی صدر منتخب ہوئی ہوں اور یہ اقدام اس بات کا اشارہ کرتا ہے کہ اوورسیززپاکستانی گلوبل فاءونڈیشن اس دنیا بھر میں اوورسیززپاکستانیوں کی ترجمانی کرتا ہے اور یہ ہم سب کے لیے ایک انٹرنیشنل ادارہ بن چکا ہے ۔اس کے علاوہ فاءونڈیشن کی خواتین ونگ کی صدر نے فاءونڈیشن کی مختلف سرگرمیوں سرانجام دی جس میں کشمیر میں جاری بھارتی جارحیت کے خلاف آواز اُٹھانے والے کشمیری رہنماءوں سے ملاقات کی اور اُن کے ساتھ اظہار ہمدردی کے ساتھ ساتھ اُن کی جدوجہد پر کشمیریوں کی حوصلہ افزائی کی ۔

اس کے علاوہ انہوں نے اسلام آباد میں بیت المال کے ذریعے چلنے والے یتیم بچوں کے اسکو ل کا بھی دورہ اور وہاں کی سب سے کمرعمر بچی کی کفالت کے لیے مکمل طور ذمہ داری لینے کا اعلان کیا ۔ اس کے علاوہ طاہرہ دین نے پاکستانی عوام الناس تک فاءونڈیشن کے باری آگہی مہم کے لیے ریڈیوپاکستان پر براہ راست انٹرویو بھی دیاجس پر اوررسیززپاکستانی گلوبل فاءونڈیشن کے فلسفہ اور اُصول مقاصد کو بہتر انداز میں پیش کیا ۔ بعدازاں ، انہوں نے اسلام آباد میں نیشنل پریس کلب پر اوورسیززپاکستانی گلوبل فاءونڈیشن کے بانی رُکن افضل بٹ کے ہمراہ پریس کانفرنس کرتے ہوئے اورسیززپاکستانی گلوبل فاءونڈیشن کی سرگرمیوں اور کارگردگی کے بارے میں بتایا جس پر پاکستانی صحافی برادری نے بھی ان سے اوورسیزز پاکستانیوں کو پاکستان میں درپیش مسائل پر مختلف سوالات کیے جس کا خواتین ونگ کی صدر نے جوابات بھی دیئے ۔

آپ یہ بھی پسند کریں گے