راجہ نجابت حسین کی برطانوی رکن پارلیمنٹ ڈیبی ابراھام کیساتھ ہندستانی حکام کے ہتک آمیرز رویہ کی مذمت

بریڈ فورڈ(نمائندہ خصوصی)جموں وکشمیر تحریک حق خودارادیت انٹرنیشنل کے چئیرمین راجہ نجابت حسین نے برطانوی پارلیمنٹ میں آل پارٹیز پارلیمنٹری گروپ برائے کشمیرکی چئیرپرسن ڈیبی ابراھام(MP (Debbie Abrahams کے ہندوستان میں داخلے پر پابندی، اور ہندوستانی حکام کی طرف سے ان کے ساتھ ہتک آمیز رویہ اختیار کر کے واپس برطانیہ بھیجنے کی شدید الفاظ میں مذمت کی ہے۔ راجہ نجابت حسین جو ڈیبی ابراھام کی قیادت میں برطانوی ممبران پارلیمنٹ کے بدھ کے روز پاکستان اور آزاد کشمیر کے دورے کے سلسلہ میں اسلام آباد پہنچ چکے ہیں نے سوموار کی صبح جب واٹس اپ پر ڈیبی سے رابطہ کر کے ہندوستان پہنچنے کے بارے میں دریافت کیا تو انہوں نے بتایا کہ انہیں ائرپورٹ پر روک لیا گیا ہے اور ان کے ساتھ امیگریشن حکام نے انتہائی ہتک آمیز رویہ اختیار کر رکھا ہے اور ان کا ویزہ مسترد کر دیا گیاہے۔

راجہ نجابت نے اپنے ایک بیان میں کہا کہ ہندوستانی حکمران پارلیمنٹیرینز کے ساتھ اس طرح کا رویہ اختیار کر کے خود بے نقاب ہو رہے ہیں۔انہوں نے کہا کہ پارلیمنیٹیرینز کے ساتھ اس طرح کا رویہ سفارتی آداب کے بھی منافی ہے۔ راجہ نجابت حسین نے کہا کہ ڈیبی ابراھام (MP (Debbie Abrahams کی قیادت میں برطانوی پارلیمنٹ کے اراکین کا وفد اپنے طے شدہ شیڈول کے مطابق19/فروری سے پاکستان اور آزاد کشمیر کا دورہ کرے گا جس کے لئے پاکستان کے فارن آفس نے تمام انتظامات مکمل کر لئیے ہیں اس سلسلہ میں راجہ نجابت حسین نے اسلام آباد میں فارن آفس کے اعلی حکام سے بھی آج ملاقات کی اور وفد کے دورے کے پروگرام کو حتمی شکل دی گئی۔

آپ یہ بھی پسند کریں گے