مواخذے کی تحریک ناکام، سینیٹ نے ٹرمپ کو الزامات سے بری کر دیا

واشنگٹن: امریکی سینیٹ نے صدر ڈونلڈ ٹرمپ کے خلاف مواخذے کی تحریک کو مسترد کر دیا ہے، اس طرح تقریباً دو ماہ کارروائی جاری رہنے کے بعد ختم ہو گئی اور امریکی صدر بدستور اپنے عہدے پر کام جاری رکھیں گے۔

تفصیلات کے مطابق ڈونلڈ ٹرمپ کے خلاف امریکی سینیٹ نے مواخذے کی تحریک مسترد کر دی، مواخذے میں اختیارات سے تجاوز اور کانگریس کو کام سے روکنے کے الزامات لگائے گئے تھے۔

امریکی سینیٹ نے صدر ڈونلڈ ٹرمپ کو مواخذے کے دونوں الزامات سے بری کر دیا، مواخذے کے پہلے الزام پر ووٹنگ میں ٹرمپ کے حق میں 52 اور مخالفت میں 48 ووٹ پڑے، جب کہ دوسرے الزام پر ووٹنگ میں ٹرمپ کے حق میں 53 اور مخالفت میں 47 ووٹ پڑے۔

خیال رہے کہ امریکی حکمراں جماعت ری پبلکن پارٹی کو سینیٹ میں اکثریت حاصل ہے، دوسری طرف ری پبلکن ہی کے سینیٹر مٹ رومنی نے صدر ٹرمپ کو عہدے سے ہٹانے کی حمایت بھی کی تھی، انھوں نے صدر ٹرمپ کے خلاف ووٹ دیا۔

آپ یہ بھی پسند کریں گے